Live News HD

Inzamam ul Haq Took the Favorite Name of Pakistanis

باﺅلرز کا ”بابراعظم“ کون ہے؟
انضمام الحق نے پاکستانیوں کا پسندیدہ نام لے لیا

شاہین آفریدی کا بولنگ میں وہی کردار ہے جو بیٹنگ میں بابراعظم کا ہے: سابق قومی کپتان و چیف سلیکٹر

لاہور: قومی کرکٹ ٹیم کے سابق کپتان و چیف سلیکٹر انضمام الحق کا کہنا ہے کہ بابر اعظم اور شاہین شاہ آفریدی ورلڈ کلاس پلیئرز ہیں، بابر محنتی پلیئر ہے اور وہ کیریئر میں بہت کچھ حاصل کرسکتا ہے، کوہلی کو کھیلتے ہوئے 10 سال ہوگئے، بابر کو ابھی 3 سال ہوئے ہیں، ابھی بابر کو بہت کچھ حاصل کرنا ہے لیکن اگر دونوں کے ابتدائی کیریئر کا موازنہ کیا جائے تو بابر کے اعداد وہ شمار کافی اچھے ہیں۔
انضمام نے کہا کہ شاہین شاہ آفریدی کا بولنگ میں وہی کردار ہے جو بیٹنگ میں بابر اعظم کا ہے، شاہین شاہ آفریدی نہ صرف پیس سے بولنگ کرتا ہے بلکہ یہ بھی جانتا ہے کہ کس کو کس جگہ گیند کرانی ہے، اس میں دنیا کا ٹاپ بولر بننے کی پوری صلاحیت موجود ہے۔

اپنی سلیکشن کمیٹی کے دور کی بات کرتے ہوئے انضمام الحق نے کہا کہ جن نوجوان پلیئرز کو انہوں نے موقع دیا انہیں موقع کے ساتھ اعتماد بھی دیا جس کی وجہ سے وہ آج سٹیبلش پلیئرز ہوچکے ہیں۔

شاداب خان، حسن علی ، فخر زمان سب کو اعتماد دیا گیا تھا اور انہوں نے پرفارم کیا،فہیم اشرف سے بھی بہت امیدیں وابستہ تھیں لیکن فہیم اتنا اچھا پرفارم نہیں کرسکے کہ جس کی امید تھی۔ ایک سوال پر انضمام الحق کا کہنا تھا کہ امام الحق کو کارکردگی کی بنیاد پر سلیکٹ کیا گیا تھا، اس نے ون ڈے کرکٹ میں پرفارمنس دے کر خود کو منوایا بھی اس کے باوجود بھی تنقید کی جاتی رہی، اس سے امام الحق کو فرق پڑا تھا، لوگوں کو کسی کی ذات کی بجائے پاکستان کا سوچنا چاہیے کہ پاکستان کیلئے کیا بہتر ہے ۔


Lahore: Former captain and chief selector of the national cricket team Inzamam-ul-Haq says that Babar Azam and Shaheen Shah Afridi are world class players, Babar is a hardworking player and he can achieve a lot in his career. It’s been 10 years since Kohli played, it’s been 3 years now, Babar has a lot to gain, but if you compare their early careers, Babar’s numbers are pretty good. Inzamam said that Shaheen Shah Afridi has the same role in bowling as Babar Azam has done in batting. He has the potential to be a bowler. Talking about the tenure of his selection committee, Inzamam-ul-Haq said that he gave confidence to the young players with whom he was given the opportunity, due to which they have become established players today. Shadab Khan, Hassan Ali, Fakhr Zaman were all given confidence and they performed. There were high hopes for Faheem Ashraf too but Faheem could not perform as well as he had hoped. In response to a question, Inzamam-ul-Haq said that Imam-ul-Haq was selected on the basis of his performance. He proved himself by giving performances in ODI cricket. Despite this, he was criticized. Yes, people should think of Pakistan instead of one’s caste, what is better for Pakistan.

News Source: Urdu Point

Tags

Saifullah Aslam

Owner & Founder of Sayf Jee Website

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Back to top button
Close

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker