News

Delhi election: Modi government faces big defeat

نئی دہلی کی اسمبلی کے انتخابات کی ووٹنگ ختم ہونے کے بعد جاری ہونے والے ایگزٹ پولز کے مطابق وزیراعظم نریندر مودی کی حکمران سیاسی جماعت بھارتیہ جنتا پارٹی کو ایک ‘بڑی اور عبرتناک شکست‘ کا سامنا ہے۔ عام آدمی پارٹی کی حکومت ختم کرنے کا بی جے پی کا خواب ادھورا رہا۔

دہلی کے نائب وزیراعلیٰ منیش سوسوڈیا نے عام آدمی پارٹی کی جیت کا ابتدائی دعویٰ کر دیا ہے۔ نئی دہلی کے مختلف علاقوں میں عام آدمی پارٹی کے امیدواروں کے پولنگ دفاتر میں پرجوش حامیوں نے جمع ہونا شروع کر دیا ہے۔

ایگزٹ پولز کے مطابق اروند کیجری وال کی سیاسی جماعت اسمبلی کے ستر رکنی ایوان میں کم از کم باون نشستیں حاصل کرنے میں کامیاب ہو جائے گی۔ بظاہر بھارتیہ جنتا پارٹی دوسری پوزیشن پر ہے لیکن کامیابی سے بہت دور ہے۔  یہی حال کانگریس کا ہے۔

نئی دہلی کی ریاستی اسمبلی کے الیکشن میں امیت شاہ نے ہی زور شور سے بی جے پی کی انتخابی مہم چلائی تھی

سابقہ انتخابات میں کیجری وال کی سیاسی جماعت 67 سیٹیں جیت پائی تھی۔

مودی حکومت کے وزیر داخلہ امیت شاہ نے فوری طور پر بی جے پی کی میٹنگ طلب کر لی ہے۔ نئی دہلی کی ریاستی اسمبلی کے انتخابات میں امیت شاہ نے ہی زور شور سے بھارتیہ جنتا پارٹی کی انتخابی مہم کی قیادت سنبھال رکھی تھی۔

مرکز میں قائم مودی حکومت کو گزشتہ پندرہ ماہ کے دوران پانچ مختلف ریاستوں کے صوبائی انتخابات میں شکست کا سامنا کرنا پڑا ہے، ان میں راجستھان، مدھیہ پردیش، مہارشٹر، چھتیس گڑھ اور جھاڑکھنڈ شامل ہیں۔

وزیراعلیٰ اروند کیجریوال نے دوبارہ الیکشن جیتنے کے لیے شہری سہولیات بہتر کرنے کی بنیاد پر مہم چلائی اور دہلی کے باسیوں کو بہتر اور عوام دوست حکومت کے حق میں ووٹ ڈالنے کی درخواست کی تھی۔


Automatic Translated By Google

According to exit polls released after New Delhi’s Assembly polls ended, Prime Minister Narendra Modi’s ruling political party, the Bharatiya Janata Party, is facing a “big and shocking defeat”. The BJP’s dream of abolishing the Aam Aadmi Party government remained unfulfilled.

Delhi’s Deputy Chief Minister Manish Sosodia has made the initial claim of victory for the Aam Aadmi Party. In various parts of New Delhi, enthusiastic supporters of Aam Aadmi Party candidates have started gathering.

According to Exit Polls, Arvind Kejriwal’s political party will be able to get at least fifty seats in the seventeen-member House of the Assembly. Apparently the Bharatiya Janata Party is in second position but far from successful. This is the case with Congress.

Amit Shah was the BJP’s campaigning force in the New Delhi state assembly elections

In the previous elections, the Kejriwal political party had won 67 seats.

Modi Government Home Minister Amit Shah has called for a BJP meeting immediately. In New Delhi’s state assembly elections, Amit Shah was the leader of the Bharatiya Janata Party’s election campaign.

The Modi government, established at the center, has suffered a defeat in the provincial elections of five different states over the past fifteen months, including Rajasthan, Madhya Pradesh, Maharashtra, Chhattisgarh and Jharkhand.

Chief Minister Arvind Kejriwal again campaigned on improving urban facilities to win the re-election and requested the residents of Delhi to vote in favor of a better and more friendly government.

Tanveer Ahmad

I'm a web desk author & covering national including international news and articles for SayfJee. Also, provide the sports updates regularly.

Leave a Reply

Your email address will not be published.

Back to top button
Close

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker